PakStudy :Yours Study Matters

لاہور کے سینئر کرائم رپورٹر سہیل احمد مغل کو 22 گھنٹے بعد ہوش آگیا۔

Ray Kashif

  • **
  • 78
  • +0/-0
  • Gender: Male
  • Ok
سینئر کرائم رپورٹر و نجی نیوز چینل کے اینکر سہیل احمد مغل کو 22 گھنٹے بعد ہوش آگیا۔

انہیں گزشتہ روز دل کی تکلیف کے باعث پنجاب انسٹیوٹ آف کارڈیالوجی ہسپتال لاہور میں لایا گیا تھا۔

اٹیک گزشتہ سال کے اٹیک سے بہت کم نوعیت کا تھا: ڈاکٹر فہد کی اخبار نویسوں سے گفتگو

لاہور(پاک سٹڈی نیوز، ہیلتھ رپورٹر، نیٹ نیوز)سینئر کرائم رپورٹر و نجی نیوز چینل کے اینکر سہیل احمد مغل کو 22 گھنٹے بعد ہوش آگیا۔ ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ اب انکی حالت خطرے سے باہر ہے۔ یاد رہے سہیل احمد مغل کو گزشتہ روز صبح 10 بجے لاہور سے کراچی روانگی کے وقت دل کی تکلیف کے باعث پنجاب انسٹیوٹ آف کارڈیالوجی ہسپتال لاہور لایا گیا تھا جہاں انہیں مسلسل 22 گھنٹے بے ہوش رہنے کے بعد ہوش آگیا ہے۔ ڈی جی ہیلتھ پنجاب ڈاکٹر زاہد کی خصوصی ہدایات پر ڈاکٹرز کی سپشل ٹیم نے ان کا علاج کیا۔
پنجاب انسٹیوٹ آف کارڈیالوجی کے ہارٹ سپیشلسٹ ڈاکٹر فہد کا کہنا ہے کہ اتنی شدید نوعیت کا اٹیک سہیل مغل کو دوسری مرتبہ آیا ہے البتہ یہ اٹیک گزشتہ سال کے اٹیک سے بہت کم نوعیت کا تھا۔ لیکن اب سہیل مغل کو مکمل پرہیز کرنا ہوگا۔ ان کا کہنا تھا کہ ایک ہفتے میں سہیل مغل گھر جانے کے قابل ہو جائیں گے۔
...