Library Sindh Study FG Study Punjab Study
PakStudy :Yours Study Matters

Strike against colleges handover to NGO

Offline علم دوست

  • *****
  • 1288
  • +2/-1
Strike against colleges handover to NGO
« on: September 27, 2008, 10:56:24 PM »

 
ہوم اکنامکس اور خاتون پاکستان کالجزکی طالبات آج احتجاجی دھرنا دیں گی
   
کراچی (اسٹاف رپورٹر) گورنمنٹ کالج آف ہوم اکنامکس اور خاتون پاکستان کالج و اسکول کو زندگی ٹرسٹ اور بک بینک کے حوالے کرنے کے خلاف جمعہ کو احتجاجاً تینوں تعلیمی اداروں کو بند رکھا گیا جس کی وجہ سے تدریسی وغیر تدریسی کام نہیں ہوسکا۔ ہفتہ27 ستمبرکو دونوں کالجزکی طالبات صبح10 بجے اسٹیڈیم روڈ پر احتجاجی دھرنا اور مظاہرہ کریں گی۔




شکریہ جنگ

میں بہت عظیم ہوں جو کہ بہت ہی عظیم علمی کام کررہا ہوں

Offline علم دوست

  • *****
  • 1288
  • +2/-1

 
کالجوں کو نجی ٹرسٹ کے حوالے کرنے کا نوٹیفکیشن رکوانے پر چیف سیکریٹری کی تعریف
   
کراچی (اسٹاف رپورٹر) سندھ پروفیسرز اینڈ لیکچررز ایسوسی ایشن کراچی کا اجلاس پروفیسر اطہر حسین مرزا کی صدارت میں ہوا۔ جس میں چیف سیکریٹری سندھ فضل الرحمن کے کردارکی تعریف کی گئی کہ انہوں نے ذاتی دلچسپی لیتے ہوئے خاتون پاکستان اور رعنا لیاقت علی خان گورنمنٹ کالج آف ہوم اکنامکس نجی ٹرسٹ کے حوالے کرنے والے نوٹیفکیشن کو رکوا کر تحقیقاتی کمیٹی بنا دی جوکہ اس معاملے کو دیکھے گی۔




شکریہ جنگ

میں بہت عظیم ہوں جو کہ بہت ہی عظیم علمی کام کررہا ہوں

Offline علم دوست

  • *****
  • 1288
  • +2/-1
Teachers strike against colleges handover to NGO
« Reply #2 on: September 29, 2008, 11:50:06 AM »

کراچی:سرکاری کالجوں کو نجی ٹرسٹ میں دیے جانے کیخلاف تمام کالجز بند
   
کراچی…کراچی کے دو سرکاری کالجوں کو نجی ٹرسٹ کے حوالے کیے جانے کے خلاف آج کراچی کے تمام کالجز آحتجاجاً بند ہیں ۔کراچی کے دو معروف کالج خاتون پاکستان گرلز کالج اور رعنا لیاقت علی خان ہوم اکنامکس کالج کو زندگی ٹرسٹ اور بک گروپ کی تحویل میں دیے جانے خلاف آج شہر کے ایک سو تئیس کالجوں میں تدریسی اور غیر تدریسی عمل کا بائیکاٹ کیا گیا ہے۔اس موقع پر صوبے کے سرکاری کالجوں کے اساتذہ کی تنظیم سندھ پروفیسر ز اینڈ لیکچرارز کراچی ریجن کا ہنگامی اجلاس بھی طلب کیا گیا ہے جس میں دونوں کا لجز کا نجی ٹرسٹ کے حوالے کرنے کا نوٹیفیکیشن واپس نہ لینے کے حوالے سے جاری احتجاجی تحریک کا لائحہ عمل طے کیا جائے گا جبکہ رعنا لیاقت علی خان ہوم اکنامکس کالج اور خاتون پاکستان ڈگری گرلز کالج احتجاجاًدو روز سے بند ہیں ۔




شکریہ جنگ

میں بہت عظیم ہوں جو کہ بہت ہی عظیم علمی کام کررہا ہوں

Offline علم دوست

  • *****
  • 1288
  • +2/-1
Teachers strike against colleges handover to NGO
« Reply #3 on: September 29, 2008, 12:08:47 PM »
Teachers strike against colleges handover to NGO

Teachers give strike call for Monday: Handover of colleges to NGO
Karachi, Sept 29: There will be a complete strike in all colleges of the city on Monday to put pressure on the government to take back the notification of handing over of two colleges to an non-governmental organisation, Sindh Professors and Lecturers Association President Professor Athar Hussain Mirza said on Saturday.

Teachers observed a strike in Khatoon-i-Pakistan Government College and Rana Liaquat Ali Khan Government College of Home Economics on Saturday in protest against the government's decision of handing over the colleges' management to a private owner.

In 2001, the government had come up with a plan of handing over 40 colleges to private owners with certain terms and conditions, he said.

However, he added, the teachers did not accept the programme and started resisting it. They were locked up for their resistance and were beaten on streets, he recalled.

He said the programme would ultimately affect middle-class students who were not in a position to bear the expenditures of privatised education institutions.

For privatisation, the government had cited the reason that it did not have enough funds to run colleges and that was why it was handing over the colleges, he said. However, the decision was taken back due to our resistance and efforts, he said.

Later the government privatised three colleges, namely St Joseph's, St Patrick's (morning) and St Patrick's (evening), he said.

He said the teachers filed a petition against the privatisation of those three colleges in the high court but no hearing took place and the case was still pending in the court.

On Sept 23, the issued a notification of handing over the management of two colleges to Zindagi Trust.

Those two colleges are Khatoon-i-Pakistan Govern-ment College and Rana Liaquat Ali Khan Government College of Home Economics.

He said the government had already given the management of SMB Government Girls College Karachi to Zindagi Trust this year when the interim government was in power.

"Today they are handing over the management and gradually the management will remove all teachers and ultimately after three to four years Zindagi Trust will be the owner of the colleges," he alleged.

Rana Liaqat Ali Khan Government College is the college which offers education in the subject of home economics and even Karachi University did not offer this facility, he said.

He said the college was in a position to achieve the status of university and if it was handed over to a private management the middle class would be affected severely.

He said now they were only protesting in Karachi but after Eid, teachers of entire Sindh would join the resistance movement.

The government must take its decision back, he demanded. PPI

میں بہت عظیم ہوں جو کہ بہت ہی عظیم علمی کام کررہا ہوں

Offline عادل

  • ****
  • 444
  • +0/-0
  • Gender: Male

 
کراچی کے تعلیمی اداروں کو بچانا ہم سب کا قومی فریضہ ہے، سپلا
   
کراچی(اسٹاف رپورٹر)سندھ پروفیسرز اینڈ لیکچررز ایسو سی ایشن کراچی کے عہدیداروں اطہر حسین مرزا ، محسن رضا بھٹی، افتخار محمد آعظمی، امت السمیع ، شمیم بھٹو ، غضنفر، آصف زیدی ، مظفر رضوی اور ڈاکٹر ارشد نے ایم کیو ایم کے قائد الطاف حسین کے بیان کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ ان کا بیان طلبہ، اساتذہ اور تعلیم سے گہری وابستگی کو ظاہر کرتا ہے۔ رہنماؤں نے الطاف حسین کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ کراچی کی تعلیمی ادارے بچانا ایک قومی ذمہ داری ہے جس کو ایم کیو ایم کی قیادت احسن طریقے سے سر انجام دے سکتی ہے۔ سپلا نے گورنر سندھ ڈاکٹر عشرت العباد خان کا اِس معاملے پر فوری نو ٹس لینے کا بھی شکریہ ادا کرتے ہوئے اپیل کی کہ وہ ایس ایم بی فا طمہ جناح گورنمنٹ گرلز کالج، کراچی جوکہ زندگی ٹرسٹ کے حوالے کیا جا چکا ہے اِس کا بھی نوٹس لیں اور اِس کا نو ٹیفیکیشن بھی ختم کروائیں ۔سپلا نے گورنر سے اپیل کی کہ جب اساتذہ تنظیموں پر پا بندی کا نو ٹیفیکیشن جاری ہوا تھا تو سپلا نے اِس کے خلاف ہا ئی کو رٹ میں پیٹیشن داخل کی تھی جس کا فیصلہ سپلا کے حق میں آیا جس پر گورنر سندھ نے یہ کہا تھا کہ حکومت سندھ ہا ئی کورٹ کے فیصلے کا احترام کرے لیکن اُس وقت کی ایجو کیشن منسٹر حمیدہ کھوڑو نے کچھ نہیں سُنا اور ہا ئی کورٹ کے فیصلہ کو سپریم کورٹ میں چیلنج کردیا جس کا تا حال کوئی فیصلہ نہیں ہو سکا ۔ سپلا کے رہنماؤں نے الطاف حسین اور گورنر سندھ سے اپیل کی ہے کہ اسا تذہ تنطیموں پر عائد پا بندی کا نو ٹیفیکیشن لیا جائے سیکریٹری تعلیم رضوان میمن اور ڈا ئریکٹر جنرل کالجز سندھ رفیق صدیقی کو فوری طور پر بر طرف کرکے علم دوست اور اساتذہ دوست شخص کو تعینات کیا جائے۔ سپلا کے اِن نے رہنماؤں کہا کہ جب تک تمام نو ٹیفیکشن واپس نہیں ہو نگے اور سیکریٹری تعلیم اور ڈا ئریکٹر جنرل کالجز کو جب تک بر طرف نہیں کیا جائے گا ہماری تحریک جاری رہے گی۔ سپلا کے رہنماؤں نے کہا کہ پیرکو کراچی کے تمام کالجز میں تمام تدریسی و غیر تد ریسی امور کا با ئیکاٹ کیا جائے گا۔ سپلا کی مرکزی با ڈی نے 9 اکتو بر کو ڈی جے سندھ گورنمنٹ سائنس کالج کراچی میں ہائی پا ورڈ کمیٹی کا اجلاس آئندہ کا لائحہ عمل طے کرنے کے بلا لیا ہے۔




شکریہ جنگ
.........
VIST LARGETS EDUCATIONAL  WEB OF Pakistan www.pakstudy.com
Pak Study

Offline علم دوست

  • *****
  • 1288
  • +2/-1
Colleges will not be handed over to NGO: Sindh Governor Dr Ishratul Ebad Khan
« Reply #5 on: September 29, 2008, 12:27:57 PM »
Colleges will not be handed over to NGO: Sindh Governor Dr Ishratul Ebad Khan

Karachi: Sindh Governor Dr Ishratul Ebad Khan has announced that the Government College of Home Economics and the Khatoon-e-Pakistan College would not be handed over to an NGO.

Khan took notice of a notification for handing over the two colleges to an NGO, and contacted Sindh Chief Minister Qaim Ali Shah. After mutual consultation it was decided that the colleges would not be handed over to the NGO.

The governor directed the authorities concerned to issue a proper notification in this regard in order to remove concern among teachers, parents and students.

The chief minister and the governor were of the view that by doing so it did not mean to let down that the position of the said NGO, adding, the only aim was that the NGO and the Education Department run with a clear cut message and in an effective manner.

میں بہت عظیم ہوں جو کہ بہت ہی عظیم علمی کام کررہا ہوں